بنگلور،28جولائی (اے یوایس) کرناٹک بی جے پی کے نوجوان لیڈر پروین نیتارو کے قتل کے سلسلے میں دو مسلم نوجوانوں کو گرفتار کیا گیا ہے۔ پولیس نے جمعرات کو یہ جانکاری دی۔ دکشینا کنڑ ضلع کے پولیس سپرنٹنڈنٹ رشیکیش بھگوان سوناونے نے بتایا کہ گرفتار ملزمان کی شناخت ذاکر (29) ساکن ہاویری ضلع کے ساونور اور بیلاری کے محمد شفیق (27) کے طور پر کی گئی ہے۔ پولیس نے بتایا کہ دونوں ملزمان پروین نیتارو کے قتل کی سازش میں ملوث ہیں۔ ضلع کے سلیا تعلقہ میں نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے اے ڈی جی پی (لا اینڈ آرڈر) آلوک کمار نے کہا کہ معاملے کی تمام زاویوں سے جانچ کی جا رہی ہے۔

اے ڈی جی پی نے تعلقہ کے بیلارے علاقے کا دورہ کیا تھا جہاں یہ واقعہ پیش آیا تھا انہوں نے اس دوران صورتحال کا بھی جائزہ لیا۔انہوں نے کہا کہ جب بدھ کو بیلاری میں حالات قابو سے باہر ہونے لگے تو پولیس کو مشتعل ہجوم کو منتشر کرنے کے لیے ہلکا لاٹھی چارج کرنا پڑا۔ کچھ لوگوں نے بی جے پی کے ریاستی صدر نلین کمار کٹیل کی گاڑی کو توڑنے کی کوشش کی۔ اس موقع پر دکشینا کنڑ ضلع کے ڈپٹی کمشنر کے وی راجندر، ایس پی رشیکیش بھگوانا سوناونے اور دیگر افسران بھی موجود تھے۔واضح رہے کہ ضلع بی جے پی یووا مورچہ سمیتی کے رکن 32 سالہ پروین کا منگل کی رات اس کے بھائی کی دکان کے سامنے موٹر سائیکل سوار حملہ آوروں نے قتل کر دیا تھا۔ اس قتل نے بدھ کے روز جنوبی کنڑ ضلع میں کئی مقامات پر کشیدگی پیدا کر دی۔ بعض مقامات پر پتھراؤ کے واقعات بھی ہوئے اور پولیس کو حالات پر قابو پانے کے لیے ہلکا لاٹھی چارج کرنا پڑا۔