نئی دہلی، 30 دسمبر(اے یوایس)پنجاب نیشنل بینک (پی این بی)سے 13,400 کروڑ روپئے کی دھوکہ دہی معاملے میں مرکزی تحقیقاتی بیورو(سی بی آئی) نے انکشاف کیا ہے کہ کلیدی ملزم،تاجر نیرومودی نے جرم چھپانے کیلئے اپنے فرموں کے تین شراکت داری ڈھانچے کو تبدیل کردیا ہے۔ یہ تین کمپنیاں مفاہمت کے مکتوب(ایل او یو)کے ذریعہ بینک سے چھ ہزار 498 کروڑ روپئے حاصل کرنے کی خاطر دھوکہ دہی کرنے کے ملزمان ہیں۔ مودی نے مبینہ طور پر ڈائمنڈس آر یو ایس، سولر ایکسپورٹس اور اسٹیلر ڈائمنڈز میں ڈمی شراکت داری کو اکثریتی اسٹیک ہولڈرس بنایا۔مبینہ طورپر مودی نے تبدیلیوں کے بارے میں پی این بی کو خبر نہیں دی اور ڈمی ڈائریکٹرس کو اکثریتی اسٹیک ہولڈر س دکھانے کیلئے سورت کوآپریٹیو بینک میں تین نئے کرینٹ اکاؤنٹ کھلوائے۔