واشنگٹن23ستمبر:اپنی ناکامیوں کو چھپانے کے لئے بی جے پی حکومت ملک کے پہلے وزیر اعظم پنڈت جواہر لال نہرو کا نام لیتی ہے، لیکن دنیا اور ملک کے عوام جدید ہندوستان کی تعمیر میں پنڈت جواہر لال نہرو کی شراکت کو اچھی طرح جانتی ہے، یہی وجہ ہے کہ دنیا میں کہیں بھی ہندوستان کی بات چلتی ہے تو پنڈت نہرو کا ذکر ہونا ضروری ہو جاتا ہے، امریکہ کے ہیوسٹن میں ’ہاؤڈی مودی‘ پروگرام میں بھی کچھ ایسا ہی دیکھنے کو ملا۔ دراصل وزیر اعظم نریندر مودی کے پلیٹ فارم سے امریکی سینیٹر نے ملک کے پہلے وزیر اعظم جواہر لال نہرو کی کامیابیوں کا ذکر کے ساتھ انہوں نے بابائے قوم مہاتما گاندھی کا بھی تذکرہ کیا۔ امریکی ہاؤس آف ریپرزینٹیٹو کے رہنما اسٹینی ایچ وایر نے کہا کہ امریکہ کی طرح ہندوستان نے بھی اپنی قدیم روایات کو گاندھی کے سبق اور نہرو کے ویژن کے ذریعے خود کو ایک محفوظ جمہوریت میں برقرار رکھا ہے، انھوں نے کہا کہ ہندستان ایک ایسا ملک ہے جہاں ہر ہندوستانی کے انسانی حقوق محفوظ ہیں۔ امریکی لیڈر نے ہندوستان کی آزادی کے وقت آدھی رات کو دی گئی جواہر لال نہرو کی تقریر کو بھی یاد کیا۔ انہوں نے مہاتما گاندھی کے ہر آنکھ سے آنسو پوچھنے کی بات کا بھی ذکر کیا، مہاتما گاندھی نے کہا تھا کہ جب تک لوگوں کی آنکھ میں آنسو ہیں اور وہ دکھی ہیں تب تک ہمارا کام پورا نہیں ہوگا۔