پٹنہ،27اکتوبر (اے یو ایس) بہار کے منگیر میں کوتوالی پولیس اسٹیشن کے علاقے میں پیر کی شامورتی وسرجن کے دوران تشدد ہوا۔ تشدد میں متعدد پولیس اہلکار زخمی ہوئے ہیں جبکہ ایک شخص کی موت بھی ہوگئی ہے۔ نیز 7 دیگر افراد کو بھی گولی لگنے کی خبر ہے۔ شہر کے دین دیال اپادھیائے چوک پر بتوں کو پتھراؤ کیا گیا جب وسرجن کے دوران بدنیتی پر مبنی عناصر کا جان بوجھ کر نشانہ بننے کے بعد پولیس فورس کو نشانہ بنایا گیا۔ پولیس کے روکے جانے پر عسکریت پسندوں کی جانب سے بھی فائرنگ کی گئی۔ پولیس نے بتایا کہ سنگرام پور پولیس اسٹیشن ہیڈ، کوتوالی پولیس اسٹیشن، قاسم بازار پولیس اسٹیشن، باسودیو پور اوپی صدر کے علاوہ بھیڑ کے حملے میں 17 دیگر پولیس اہلکار بھی زخمی ہوئے۔

پولیس پر مسلسل پتھراؤ اور ہجوم کی فائرنگ سے شہر میں افواہیں پھیل گئیں اور ماحول خراب کرنے کی کوشش کی گئی۔ پولیس نے جائے وقوعہ سے تین اسلحہ، گولیاں اور بوسیدہ سامان بھی برآمد کیا۔ واقعے کے بعد ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ اور سپرنٹنڈنٹ پولیس نے موقع اور منگیر صدر کے علاقے کا دورہ کیا۔ اس وقت صورتحال پرامن ہے۔ ملزمان کی شناخت کی جا رہی ہے۔پولیس کے مطابق یہ بات سامنے آئی ہے کہ ماحول خراب ہوچکا تھا

اور کچھ لوگوں نے پولیس پر جان بوجھ کر حملہ کرنے کا جھوٹا الزام لگا کر پولیس کے خلاف مشتعل کیا تھا۔ اس کیس کے سلسلے میں کچھ شرپسندوں کو گرفتار کیا گیا ہے۔ نائب وزیر اعلی سشیل مودی نے بھی اس معاملے کے بارے میں ٹویٹ کیا ہے۔ انہوں نے اس واقعہ کو بدقسمتی سے تعبیر کرتے ہوئے الیکشن کمیشن سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اس کی تحقیقات کریں اور قصوروار اہلکاروں پر کارروائی کی جائے۔