کچھ دن عجیب سے ہوتے ہیں
اُن میں مسلسل اوازاری کی کیفیت طاری رہتی ہے
ایسے دن ضرورت سے زیادہ طویل محسوس ہوتے ہیں 
ہر چھوٹی چھوٹی بات سے کوفت اور جھنجھلاہٹ محسوس ہوتی ہے
ایک انجانی اُلجھن ہوتی ہے جو سمجھ سے باہر ہوتی ہے
مگر اس کا احساس غالب رہتا ہے
اس کیفیت کو بیان کرنا مشکل ہے
یوں سمجھ لیجیے جیسے شدید سردی میں
ٹاول والے موٹے موزے پہنے کوئی شخص
چہل قدمی کرتا ہوا غلطی سے پانی پر قدم رکھ دے
گیلے موزے پہن کر رکھے اُنہیں اتار نہ سکے
اور نہ ہی بدل سکے۔ ایسی اُلجھن۔ 

عینی خان